2021 January 19
شوہر دار عورت بغیر نکاح کے کسی غیر مرد سے جنسی تعلقات قائم کرسکتی ہے !
مندرجات: ١٣٤ تاریخ اشاعت: ٢٠ August ٢٠١٦ - ١٨:٤٥ مشاہدات: 3841
وھابی فتنہ » پبلک
ویابیوں کا ایک اور نیا کارنامہ
شوہر دار عورت بغیر نکاح کے کسی غیر مرد سے جنسی تعلقات قائم کرسکتی ہے !

واٹس ایپ پر ایسے فتوے کی کاپی گردش کر رہی ہے جس میں جامعہ بنوریہ عالمیہ نے ایک عجیب و غریب فتوی صادر کیا ہے۔

واٹس ایپ پر ایسے فتوے کی کاپی گردش کر رہی ہے جس میں جامعہ بنوریہ عالمیہ نے ایک عجیب و غریب فتوی صادر کیا ہے۔
اس فتوے کے مطابق اگر کسی عورت کا شوہر جہاد یا تبلیغی جماعت کے لئے گیا ہے تو چار مہینہ غیر حاضری کے سبب اس کی بیوی کو اجازت ہے کہ کسی بھی غیر سے جنسی تعلقات قائم کرلے۔
زناکاری پر ابھارنے والے اس فتوے میں کہا گیا ہے کہ اس کام کے لئے نکاح کی بھی ضرورت نہیں ہے!
واضح رہے کہ وہابی، رسول اللہ صلی اللہ علیہ واآلہ وسلم کے زمانے میں رائج نکاح متعہ کو بدعت قرار دیتے ہیں۔ جس کو رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ کے بعد عمر نے حرام قرار دیا جبکہ صحابی رسول جناب زبیر کے بیٹے عبد اللہ ابن زبیر، نکاح متعہ کی اولاد تھے۔




Share
1 | Jalilbalouch | | ١٦:٢٥ - ٢٢ February ٢٠١٨ |
ھم تو صرف یہ کھنا چاھتے جن لوگون نے بغض شیعہ کی وجہ جس متعہ کو حرام قرار دیا ھے اب انکی اپنی عورتین کس حد تک چلی گئی ھین

جواب:
 سلام علیکم۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جی محترم یہ حقیقت ہے کہ متعہ ایک جائز چیز ہے ۔۔۔سب کا اس بات پر اتفاق ہے کہ اصحاب کے دور میں یہ جائز تھا اور اختلاف اس میں ہے کہ یہ بعد میں بھی جائز باقی رہا یا نہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ لیکن قابل توجہ نکتہ یہ ہے کہ سب نے اس کی وجہ اصحاب کی شہوت پرکنٹرول کرنے اور اصحاب کو گناہ سے بچنے کے لئے اس کو جائز قرار دیا ہے ۔۔۔۔۔ اب اگر اصحاب اس تقدس اور عظمت کے باجود اس چیز کی طرف محتاج ہو تو بعد والوں کے لئے تو اس کی زیادہ ضرورت ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔ اسی لئے امام علی علیہ سلام اور ابن عباس سے نقل ہوا ہے کہ اگر عمر متعہ سے منع نہ کرتے تو سوای شقی افراد کے کوئی زنا نہیں کرتے۔۔۔
۔۔۔۔
عجیب بات یہ ہے کہ جو شیعوں کے خلاف تبلیغ کرتے ہیں اور شیعوں کو متعہ کی اولاد کہتے ہیں اور شیعہ ناموس کی بے احترامی کرتے ہیں یہی لوگ خود ہی نام بدل کر متعہ پر عمل کرتے ہیں ۔جیساکہ نکاح مسیار اور نکاح جہاد شہوت کی پیاس مٹانے کے لئے اہل سنت میں رائج ہے متعہ اور ان میں کوئی فرق نہیں ۔۔۔۔
   
* نام:
* ایمیل:
* رائے کا متن :
* سیکورٹی کوڈ:
  

آخری مندرجات